مہنگائی کیخلاف راولا کوٹ میں تاریخی جلوس، دھرنا10اگست سے سول نافرمانی تحریک کا اعلان

راولاکوٹ(آصف اشرف) 10 اگست سے آزاد کشمیر میں سول نافرمانی کی تحریک شروع کرنے کا اعلان پہلے مرحلہ پر بجلی بل نہیں دئیے جائیں گئے ہزاروں افراد کی ریلی میں راولاکوٹ انجمن تاجران کے صدر عمر نزیر کشمیری کا اعلان، احاطہ عدالت میں سپریم کورٹ آزاد کشمیرسرکٹ برانچ مین گیٹ پر دھرنا دے دیا گیا چئیرمین لیبریشن فرنٹ رات بھر کارکنان کے ہمراہ دھرنا میں موجود رہے ،دس اگست سے بجلی بلات نہ دینے کی شروعات کر کے سول نافرمانی کی تحریک مرحلہ وار آگے لے جانے کا فیصلہ ایکشن کمیٹیوں سول سوسائٹی ٹرانسپورٹر وکلا علاقائی تاجران تنظیموں اور صحافیوں کی مشاورت سے کیا گیا اس سے قبل ازاد کشمیر کی ستر سالہ تاریخ کا سب سے بڑا جلوس نکلا بزرگ بچے بھی ریلی میں شریک رہے شہر راولاکوٹ مکمل بند رہا رضاکارانہ بغیر شیڈول ٹرانسپورٹ بھی بند رہی ماضی میں آٹے سے سبسڈی ختم کرنے والے سابق وزیر اعظم یعقوب خان کی طرف سے دھرنوں اور احتجاج کی مخالفت کو شرکاءنے شاہ سے زیادہ شاہ کی وفاداری قرار دے دیا ازاد کشمیر بھر میں آٹا اور بجلی گلگت بلتستان جتنی قیمت پر مہیاءکرنے کے مطالبہ پر راولاکوٹ میں جاری احتجاج میں شدت پیدا ہوگئی ہے راولاکوٹ انجمن تاجران کے صدر عمر نزیر کشمیری کی قیادت میں ہزاروں افراد کی ریلی کے بعد راولاکوٹ میں اٹھاسی دن سے سپلائی ڈپو پر دئیے دھرنا کے بعد احاطہ عدالت کے مین گیٹ پر ایک اور دھرنا دے دیا گیا دوران احتجاج سڑکوں پر مزاحمت کاروں کا راج رہا شہروں اور قصبوں سے انسانی سمندر کی مانند لوگ راولاکوٹ امڈ چلے جگہ جگہ مزاحمت کاروں کے ڈیرے انتظامیہ بے بس رہی فتح کی سمت متحد بڑھے چلو نفرتیں سمیٹتے محبتیں بکھیرتے بڑھے چلو کی پونچھ اج عملی تصویر بن گیا قوم پرست الحاقی جہادی ترقی پسند ایک اواز ہوچلے سرکاری گاڈیوں کو بھی اناونسمنٹ کر کے سڑکوں پر نہ انے روک دیا نیلم سے بھمبر تک خطہ سری نگر بن گیا بار کونسل کی اپیل پر وکلا بھی اظہار یک جہتی کرنے عدالتوں کا بائی کاٹ کر گئے بابائے قوم مقبول بٹ شہید کا گیت اپنے لیے جئیے تو کیا جئیے تو جی اے دل زمانے کے لیے اج اہل پونچھ نے سارے ازاد کشمیر کے لیے سہولیات لینے سچ ثابت کر دکھایا ازاد کشمیر حکومت کو دی ڈیڈ لائن گزشتہ روز ختم ہو گئی تھی ازاد کشمیر میں اٹے کی قیمت گلگت بلتستان جتنی رکھے جانے اور بجلی بلات سے تمام ٹیکسیز کے خاتمہ کے لیے مراعات یافتہ حکومتی کارندوں کی مراعات ختم کرنے چک ہریام پل کی فوری تعمیر شروع کرنے جیسے مطالبات کی حمائیت میں راولاکوٹ شہر تاریخی جلوس و جلسہ کے ساتھ شٹر ڈاون ہڑتال بھی کی گئی گذشتہ ماہ کی گئی شٹر ڈاون ہڑتال کے بعد اب اج پھر ہزاروں افراد کی ریلی کے ساتھ شٹر ڈاون ہڑتال نے حکومت ازاد کشمیر کو تگنی کا ناچ رچا کر رکھ دیا راولاکوٹ تھوراڑ پانیولا داتوٹ عباس پور کھائی گلہ بن جونسہ حسین کوٹ ہجیرہ علی سوجل چھوٹاگلہ چک سنگولا مجائد ابادسمیت پونچھ کے مختلف علاقوں سے لوگ راولاکوٹ پہنچے ازاد کشمیر بھر کی طرح لوگ دیوانہ وار سڑکوں پر نکل ائے اخری اطلاع کے مطابق ہزاروں افراد نے ریلی کے بعد کچہری میں بھی دھرنا دے دیا ہے راولاکوٹ شہر کے وسط میں یہ دوسرا دھرنا ہے ایک دھرنا اٹھاسی روز سے سول سپلائی ڈپو کے مرکزی گیٹ پر جاری ہے راولاکوٹ کے بعد کھائی گلہ تھوراڈ ہجیرہ ٹائیں میں بھی دھرنے جاری ہیں پرزور احتجاج میں شدت پیدا ہوگئی ہےراولاکوٹ شہر سے شروع تحریک نے ازاد کشمیر بھر میں سول سوسائٹی اور سیاسی کارکنان کی محنت کش طبقات سے مل کر احتجاجی مظاہروں شٹر ڈاون اور وکلا کے عدالتی بائیکاٹ سے سارے ازاد کشمیر کا نظام زندگی مفلوج کر ڈالا ہے صدر راولاکوٹ انجمن تاجر ان عمرنذیر کشمیری کی قیادت میں ہزاروں افراد کی ریلی نکالی گئی شرکا نے نعرے بازی کی بجلی ہماری قبضہ تمارا ڈیم ہمارے راج تمارا نامنظور اٹا مہنگا نامنظور لٹ کے کھا گئے ہائے ہائے جیوے کشمیر میری جان جموں گلگت بلتستان کے ترانوں سے شہر راولاکوٹ گونج اٹھا ہے اٹے کی قیمت گلگت بلتستان جتنی رکھی جائیں بجلی بلات پر لگے ٹیکسیز ختم کیے جائیں ازاد کشمیر میں مفت بجلی دی جائے اور کشمیر فری لوڈ شیڈنگ زون قرار دیا جائے ازاد کشمیر کا اپنا نیشنل گریڈ سٹیشن قائم کیا جائے ای بلنگ کا ڈرامہ بند کیا جائے میرپور میں فوری انٹرنیشنل ائیر پورٹ اور چک ہریام پل کی فوری تعمیر شروع کی جائے اور میرپور کو سوئی گیس فراہمی کی جائے پلندری بہتراں روڈ تعمیر کی جائے جیسے مطالبات کی مانگ کر رہے تھے تاجروں کی تنظیم راولاکوٹ انجمن تاجر ان کی اپیل پر راولاکوٹ شہر سمیت پونچھ ڈویثرن کے چاروں اضلاع کے چھوٹے بڑے بازاروں میں مظاہروں کے ساتھ تین گنٹےعلامتی شٹر ڈاون ہڑتال کی گئی واضع رہے کہ اس تنظیم کے صدر عمر نزیر کشمیری نےاٹھاسی دنوں سے راولاکوٹ میں سرکاری افیسرز رہائش گاہوں سے ملحق سول سپلائی ڈپو کے بائر دھرنا دے رکھوایاہے جس وجہ کمپلیس میں رہائش پزیر کمشنر پونچھ ڈویثرن ڈپٹی کمشنر پونچھ ڈی ائی جی ایس ایس پی اور دیگر انتظامی افیسر ان دوسری طرف سے راستہ بدل کر دفاتر اتے جاتے رہے مظاہرین کا موقف ہے کہ باوجود اس کہ ہر سال تیس جون تک کا گندم کا کوٹہ خرید کر ملوں میں رکھا گیا ہے اخری دو ماہ میں عزیز خان نامی مل مالک محکمہ خوراک سے مل کر قیمت میں اضافہ کروا لیتا ہے سیکرٹری خوراک منصور قادر ڈار پر دو ارب روپیہ کرپشن کے الزام پر حالیہ دنوں وزیر اعظم کی طرف سے معطلی ہمارے موقف کی سچائی ہے ہڑتال کرنے والوں کا دعوی ہے کہ ازاد کشمیر حکومت کو بھی اس گندم کی خریداری پر گلگت بلتستان جتنی سبسڈی کی رقم ملتی ہے مگر وہ رقم اسلام اباد حکومت خود عیاشیوں کی نذر کر دیتی ہے اور گلگت بلتستان کی نسبت سات گنا اضافی قیمت پر کشمیر میں اٹا فروخت کیا جاتا ہے پاکستان میں اٹا سستا کیا جا رہا ہے اور یہاں مہنگا کر دیا گیا شہبازشریف حکومت نے آزاد کشمیر کو ملی سبسڈی سے اربوں روپیہ لیکر پنجاب میں مفت اٹا تقسیم کیا تاکہ الیکشن میں ووٹ ملیں بائیس گھنٹے کی مسافت پر گلگت میں سوا دس سو روپیہ فی من اٹا میسر ہے اور چار گھنٹے کی مسافت پر ازاد کشمیر میں چوتیس سو روپیہ فی من جو سات گنا مہنگا بنتا ہے اب قبول نہیں گلگت بلتستان اور ازاد کشمیر کی عالمی حثیت ایک ہے اب ہم کو بھی اس قیمت پر اٹا دینا ہوگا بجلی پر مظفر اباد حکومت نے بلاوجہ بھاری ٹیکسیز لگا رکھے ہیں حالانکہ حکومت پاکستان فی یونٹ بجلی کی قیمت محض دو روپیہ انسھٹہ پیسے وصول کرتی ہے بیسوں طرح کے ٹیکسیز لگا کر تیس سے چالیس روپیہ فی یونٹ قیمت لی جاتی ہے چند روز قبل محکمہ برقیات کو ایک ارب سے زاہد کی رقم ملی وہ غریبوں سے بوجھ ہٹانے کے بجائے خود ہڑپ کی جائے گی بجلی بلات کشمیر میں تیار کرنے کے بجائے لاہور سے تیار کرانے شروع کیے گئے جس کا کوئی جوازنہیں دوسری طرف امریکہ کے اداروں کے بلات باغ آزادکشمیر میں تیار ہو رہے ہیں ایک ریٹائرڈ بیورور کریٹ کو مالی فائدہ دینے اس سے کمیشن پر گجرانوالہ کی ایک غیر میعاری فیکڑری سے ناقص میٹر تیار کر کے اضافی قیمت پر لوگوں کو خرید نے مجبور کیا جا رہا ہے چھ سو روپیہ میں تیار میٹر چار ہزار روپیہ میں دیا جا رہا ہے اور برسوں سے لیے گئے میٹر رینٹ کا حساب کتاب ہی نہیں غیر قانونی منظوری برقیات کے افیسر ان اور ملا زمین کو مفت بجلی دے کر خزانے کو کروڈوں روپیہ کا ٹیکہ لگایا جاتا ہے اور پھر یہ نقصان عام صارفین پر نت نئے رنگ برنگے ٹیکسیز لگا کر پورا ہو رہا ہے محکمہ برقیات کے آفیسرز اور ملازمین کو خود ساختہ قانون کے تحت مہیا یہ مفت بجلی ختم کرنا ہوگی سرکاری دفاتر میں مفت بجلی کی سہولت کے ساتھ سرکاری گاڈیوں کو نجی استمعال خاص کر بچوں کے سکولز لانے جانے اور بیگمات کی شاپنگ اور سیر تفریح تعزیت پر پابندی لگائی جائے ای بلنگ سسٹم فوری ختم کیا جائے مقررین نے کہا کہ چار ہزار میگا واٹ بجلی اس وقت کشمیر سے اسلام اباد منتقل ہورہی ہے سارے ازاد کشمیر کی ضرورت ساڈھے چار سو میگا واٹ ہے اور یہاں لوگوں کو صرف ایک سو اسی میگاواٹ بجلی دی جا رہی ہے محض دو سو ستر میگا واٹ بجلی اور ضرورت ہے مگر چار ہزار میگا واٹ لیکر دو ستر میگا واٹ بجلی نہیں دی جا رہی ہڑتال لیوں کا موقف ہے کہ اگر یہ مطالبات دس اگست تک نہیں منظور کیے جاتے تو سول نافرمانی کی تحریک شروع کر کے پورا ازاد کشمیر بھی مکمل بند ہوگا سرکاری دفاتر نہیں چلنے دیں گئے مقررین نے سابق وزیر اعظم یعقوب خان کی طرف سے غریب دوست احتجاج کی مخالفت پر انہیں کڑی تنقید کا نشانہ بنایا اور مظفر اباد اسمبلی کے تمام ممبران سے اپیل کی کہ وہ غریبوں کے ووٹ لیکر ان کے ٹیکسز سے عیاشی کے بجائے بجلی بلات پر لگے ٹیکسز اور اٹے کی سبسڈی سرمایہ داروں کی عیاشی پر خرچ کرنے کی مخالفت کرنے کی ان سے مانگ کی اور کہا کہ تمام ممبران اسمبلی کو یاد رکھنا چائیے کہ دنیا مکافات عمل کا نام ہے یہ ممبران اسمبلی عمران خان سے زیادہ مقبول اور مشرف سے زیادہ طاقت ور نہیں اگر خاموشی رکھی تو مشرف اور عمران سے بھی زیادہ ذلت ان کا مقدر ہوگی

یہ بھی پڑھیں : لوڈشیڈنگ سے تنگ شہری سڑکوں پر نکل آئےنیشنل ہائی وے بلاک ،گاڑیوں کی طویل قطاریں

اپنا تبصرہ بھیجیں