اسد عمر سے متعلق چیئرمین پی ٹی آئی نے کیاکہا؟شیر افضل مروت نے بتا دیا

اسلام آباد(وقائع نگار)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما و سینئروکیل شیرافضل مروت نے اسد عمر کے حوالے سے انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ پارٹی میں واپس آنا چاہتے تھے لیکن چیئرمین پی ٹی آئی نے انکار کردیا تھا۔
”پاکستان ٹائم “کے مطابق ہم نیوز کے پروگرام” اپ فرنٹ ود مونا عالم” میں گفتگو کرتے ہوئے شیر افضل مروت نے کہا کہ اسد عمر نے مجھے پیغام دیا تھا کہ میراچیئرمین پی ٹی آئی کو پیغام پہنچائیں پارٹی میں واپس آنا چاہتا ہوں۔میں ان کا پیغام لے کرآکر چیئرمین تحریک انصاف کے پاس زمان پارک گیا، میں بھی چاہتا تھا کہ وہ واپس آئیں لیکن پارٹی سربراہ نے انکار کرتے ہوئے کہا کہ فواد چودھری ، اسد عمر سمیت تین چار اور نام ہیں جنہوں نے نو مئی کے واقعہ کے بعد پریس کانفرنس کر کے پارٹی ورکرز کاحوصلہ توڑا ہے۔رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ چار دن بعد اسد قیصر بھی میرے پاس اسد عمر کیلئے آئےاور کہا کہ انہیں واپس پارٹی میں لینا ہے، سابق اسپکر قومی اسمبلی کے کہنے پر میں نے دوبارہ عمران خان سے رابطہ کیا اور کہا کہ کسی کام کے سلسلے میں لاہور آنا چاہتا ہوں۔انہوں نے مجھے جواب دیا کہ اگر اسد عمر کی بات کیلئے آنا چاہتے تو بہتر ہے نہ آﺅ، میں اس کے باوجود ان کے پاس گیا لیکن انہوں نے دوبارہ انکارکردیا۔ اس کے علاوہ پانچ اور لوگ بھی ہیں جو واپس آنا چاہتے ہیں لیکن چیئرمین پی ٹی آئی نے انہیں بھی لینے سے انکار کر دیا ہے۔ان میں ایک ایسی شخصیت بھی ہے جن کا میں نام لوں گا تو ان کی جو رہی سہی تکریم ہے وہ بھی ختم ہو جائے گی۔شیر افضل مروت کا مزید کہنا تھاکہ اسد عمر ہمارے پارٹی میں انتہائی قابل احترام شخصیت رہے، میری بھی خواہش تھی کہ وہ واپس آتے لیکن آج کا ٹویٹ دیکھ کر انہوں نے ہمیں انتہائی مایوس کیاہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں