الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کو بڑی یقین دہانی کرا دی

اسلام آباد(وقائع نگار خصوصی)پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی)کی قانونی ٹیم نے چیف الیکشن کمشنر سے ملاقات میں لیول پلیئنگ فیلڈ کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی مائنس نہیں ہو گا جو چیرمین پی ٹی آئی ہیں وہی رہیں گے، دوسری طرف چیف الیکشن کمیشنر نے تحریک انصاف کے وفد کو بڑی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا ہے کہ ”بلے “کا نشان پی ٹی آئی کو ہی ملے گا اور کوئی ”مائنس “نہیں ہو گا،تحریک انصاف کے تمام تحفظات دور کئے جائیں گے۔
”پاکستان ٹائم“کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا سے تحریک انصاف کی قانونی ٹیم نے ملاقات کی، ٹیم میں بیرسٹر گوہر علی اور ڈاکٹر بابر اعوان شامل تھے۔تحریک انصاف کے وفد نے چیف الیکشن کمشنر کو انتخابی مہم میں رکاوٹوں سے متعلق آگاہ کیا اور انٹرا پارٹی انتخابات سے متعلق تحریری فیصلہ جاری کرنے کی درخواست کی اور الیکشن کمیشن سے لیول پلیئنگ فیلڈ کا مطالبہ کر دیا۔ملاقات میں کارکنوں کی جبری گمشدگیوں کا سلسلہ بند کرنے،گرفتار کارکنوں کو رہا کرنے کا مطالبہ کیا،چیف الیکشن کمشنر نے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرا دی۔

بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر گوہر علی کا کہنا تھا کہ آج الیکشن کمیشن حکام سے ملاقات ہوئی،ہم نے الیکشن کمیشن کو چارٹر آف ڈیمانڈ دیا،نگران حکومت فنڈز جاری کر رہی ہے جو نہیں کر سکتی،ہمارے انتخابی نشان کا آرڈر ابھی تک ریلیز نہیں کیا گیا،پی ٹی آئی کے جھنڈے اور بینرز پرنٹ نہیں ہونے دیئے جا رہے،لیول پلیئنگ فیلڈ الیکشن کمیشن کی آئینی ذمہ داری ہے،ہم نے مطالبہ کیا کہ ایک نوٹیفیکیشن جاری کریں جس میں ہمیں فری اینڈ فئیر الیکشن کی مہم کی اجازت دی جائے۔ترجمان پی ٹی آئی نے کہا کہ ہم نے الیکشن کمیشن سے کہا کہ ہمارا انتخابی نشان کا آرڈر ابھی تک ریلیز نہیں کیا گیا ان کو کہا ہے کہ تفصیلی آرڈر جاری کیا جائے،جس پر الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ بیٹ کا نشان پی ٹی آئی کا ہی ہو گا،کوئی مائنس نہیں ہو گا جو چیرمین پی ٹی آئی ہیں وہ رہیں گے۔چیف الیکشن کمشنر نے ہماری تمام جائز گزارشات پر کہا کہ سب مانی جائیں گی۔یرسٹر گوہر علی نے کہا کہ الیکشن کمیشن آئینی ادارہ ہے اور مکمل با اختیار ہے،چیف الیکشن کمشنر کو صدر سے بھی ملنا چاہیئے تھا،ہماری بات تحمل سے سنی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں